MAARIF RESEARCH JOURNAL

ISSN 2415-2315 (Online), ISSN 2221-2663 (Print)

سامراجیت ’’سام راج‘‘ سے ماخوذ ہے جو ہندی زبان کا لفظ ہے اور شہنشاہی نظامِ حکومت،نو آبادیات اور ما تحت سلطنتیں رکھنے کی منصوبہ بندی کے مفہوم میں مستعمل ہے۔’’قاموسِ مترادفات‘‘ میں ’’استعمار‘‘، ’’نوآبادیاتی نظامِ حکومت‘‘ اور ’’شہنشاہیت‘‘ اس کے مترادفات کے طورپر دیے گئے ہیں۔ انگریزی میں ’’سامراجیت‘‘ کے لیے "Imperialism" اور "colonialism" کے الفاظ استعمال کیے جاتے ہیں

read more

December 1st, 2014

Posted In: Issue 08, MAARIF RESEARCH JOURNAL

Tags: , , ,

Leave a Comment

جنوبی ایشیا کے مسلمانوں نے اس خطے میں جو سب سے نمایاں کارنامہ انجام دیا، اس کی جزئیات میں گئے بغیر، محض یہ اشارہ کافی ہے کہ انھوں نے ایک ایسی مملکت قائم کی اور صدیوں تک اسے کامیابی سے قائم رکھا جس نے تہذیب و ثقافت کے لحاظ سے اْن روایات کو جنم دیاجو اس خطے کے لیے ایک نظیر بن گئیں۔اس کے استحکام، خوش حالی اور ثقافتی امتیازات نے ایک عالم کو اپنی جانب متوجہ کیا اور یہ مختلف اقوام کے تخیلات کا حصہ بنتی رہی۔اس کے باوجود اس کے ساتھ المیہ یہ پیش آیا کہ جب اندرونی کمزوریوں اور اخلاق باختگی کی وجہ سے یہ زوال آمادہ ہوئی تو اس نے اپنا روایتی کردار ادا کرنا چھوڑ دیا

read more

January 1st, 2014

Posted In: Issue 07, MAARIF RESEARCH JOURNAL

Tags: , , ,

One Comment

دو قومی نظریہ میں پہلی بار سیاسی جاذبیت علامہ اقبال کے خطبۂ الٰہ آباد سے پیدا ہوئی جس میں انہوں نے مسلم اور ہندو اقوام کے مابین فرق کی وضاحت کی۔ علامہ اقبال کے خطبۂ الٰہ آباد (۲۹ دسمبر ۱۹۳۰ء) کا کمال یہ تھا کہ اول تو اسے آل انڈیا مسلم لیگ کے پلیٹ فارم سے پیش کیا گیا تھا جو مسلمانوں کی سب سے بڑی سیاسی جماعت تھی، دوم علامہ اقبال اس وقت تک مسلمانوں کے ایک مسلمہ لیڈر بن چکے تھے اور ان کے کلام نے مسلمانوں میں بیداری اور خودشناسی کی لہر پیدا کر دی تھی

read more

July 1st, 2011

Posted In: Issue 02, MAARIF RESEARCH JOURNAL

Tags: ,

Leave a Comment